مائیک ٹائسن کو ہوائی جہاز کے جھگڑے پر کسی الزام کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا۔ ایکسپریس ٹریبیون


لاس اینجلس:

سابق ہیوی ویٹ باکسنگ چیمپئن مائیک ٹائسن کیلیفورنیا میں ایک پراسیکیوٹر نے منگل کو کہا کہ ساتھی جہاز کے مسافر کو بار بار گھونسنے پر مجرمانہ الزامات کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا۔

سیل فون کی فوٹیج میں دکھایا گیا ہے کہ ٹائسن اپنی سیٹ کے پچھلے حصے پر ٹیک لگا کر اس شخص کو جھٹکا لگا رہا ہے، جو 20 اپریل کے واقعے کے بعد زخموں کے نشانات اور کچھ خون بہہ رہا تھا۔

TMZ تفریحی ویب سائٹ نے بتایا کہ “آئرن مائیک” ابتدائی طور پر مسافر اور اس کے دوست کے ساتھ دوستانہ تھا جب وہ سان فرانسسکو سے فلوریڈا جانے والی پرواز میں سوار ہوئے تھے، لیکن جب وہ شخص “اُسے اشتعال دلانا بند نہیں کرے گا” تو اس نے چھین لیا۔

سان میٹیو کاؤنٹی کے ڈسٹرکٹ اٹارنی سٹیو واگسٹاف نے اے ایف پی کو بتایا کہ سابق جنگجو کے خلاف کوئی الزام عائد نہیں کیا جائے گا۔

واگسٹاف نے کہا، “ہم نے سان فرانسسکو پولیس ڈیپارٹمنٹ اور سان میٹیو کاؤنٹی شیرف آفس کی پولیس رپورٹس کا جائزہ لیا ہے اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی طرف سے ہوائی جہاز میں موجود دیگر افراد سے جمع کی گئی مختلف ویڈیوز دیکھی ہیں۔”

“ہمارا فیصلہ یہ ہے کہ ہم تصادم کے آس پاس کے حالات کی بنیاد پر مسٹر ٹائسن کے خلاف کوئی الزام عائد نہیں کریں گے۔

“ان میں متاثرہ شخص کا طرز عمل جو واقعہ تک لے جاتا ہے، مسٹر ٹائسن اور متاثرہ کے درمیان بات چیت کے ساتھ ساتھ متاثرہ اور مسٹر ٹائسن دونوں کی درخواستیں شامل ہیں کہ اس معاملے میں کوئی فرد جرم عائد نہ کی جائے۔”

اب تک کے بہترین ہیوی وائٹس میں سے ایک سمجھے جانے والے، ٹائسن کو اپنے بے ترتیب رویے کے لیے بھی جانا جاتا ہے، جس میں 1997 کے مقابلے میں ایونڈر ہولی فیلڈ کے کان کا ایک ٹکڑا کاٹنا بھی شامل تھا۔

ٹائسن کو 1992 میں عصمت دری کے جرم میں سزا سنائی گئی تھی، اور اسے تین سال کے لیے جیل بھیج دیا گیا تھا۔

2007 میں اس نے کوکین کی لت کا اعتراف کیا۔

.



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published.