TCP نے 300,000 ٹن گندم کے لیے درآمدی ٹینڈر جاری کیا۔


اسلام آباد: ٹریڈنگ کارپوریشن آف پاکستان (TCP) نے 300,000 ٹن گندم کی درآمد کے لیے بین الاقوامی ٹینڈر جاری کر دیا ہے۔

وفاقی حکومت نے تباہ کن سیلاب کے باعث ملک میں اجناس کی کمی کو پورا کرنے کے لیے گندم درآمد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ٹریڈنگ کارپوریشن آف پاکستان (TCP) 26 ستمبر تک بین الاقوامی سپلائرز سے بولیاں وصول کرے گی۔ بولی کا عمل بھی اسی تاریخ کو کھولا جائے گا۔ TCP نے پچھلے ٹینڈر کے ذریعے 250,000 ٹن گندم $407 فی ٹن کے حساب سے خریدی تھی۔

پاکستان ایگریکلچرل سٹوریج اینڈ سروسز کارپوریشن (PASSCO) TCP سے اسٹاک اٹھا رہا ہے۔ ٹی سی پی کے ذرائع کے مطابق حکومت گندم کی قلت پر قابو پانے اور اسٹریٹجک ذخائر کی تعمیر کے لیے درآمد کر رہی ہے۔

مزید پڑھ: سندھ حکومت نے آٹے کی قیمت 65 روپے فی کلو مقرر کر دی۔

اس سے قبل کراچی ہول سیلرز گروسرز ایسوسی ایشن (کے ڈبلیو جی اے) کے چیئرمین عبدالرؤف ابراہیم نے ملک بھر میں آٹے کے بحران اور قیمتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا تھا۔ 200 روپے فی کلو گرام.

اے آر وائی نیوز کے پروگرام باخبر سویرا میں گفتگو کرتے ہوئے کے ڈبلیو جی اے کے چیئرمین عبدالرؤف ابراہیم نے انکشاف کیا کہ آنے والے دنوں میں ملک میں آٹے کے بحران کا امکان ہے۔ انہوں نے کہا کہ آٹے کی قیمتوں میں 200 روپے فی کلو تک اضافے کا امکان ہے۔

تبصرے

.



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published.